میجر(ر)طاہر صادق کے این اے 55 حلقہ نہ چھوڑنے کی وجہ سامنے آ گئی۔

فتح جنگ(صداقت محمود مٹھو سے ) میجر(ر)طاہر صادق کے این اے 55 حلقہ نہ چھوڑنے کی وجہ سامنے آ گئی ایک بات تو پہلے سے ہی طے تھی اور 25 جولائی کو جنرل الیکشن کے رزلٹ نے بھی یہ بات ثابت کر دی ہے کہ میجر طاہر صادق کے چاہنے والے حلقہ این اے 56 میں ایک بہت بڑی تعداد میں موجود ہیں جس میں ان کے ذاتی ووٹرز،مشکل دورِِ اپوزیشن میں ساتھ نہ چھوڑنے والے سپورٹرز کے علاوہ ان کی کھٹڑ برادری بھی ایک بڑا موثر کردار ادا کرتی رہی ہے اس حلقہ کی بنیادی خصوصیت یہ بھی ہے کہ یہاں کے لوگ میجر طاہر کی مسحور کن شخصیت ،ان کے دلیرانہ انداز سیاست اور ماضی میں اس علاقہ کیلئے تاریخی ترقیاتی کاموں کی وجہ سے بہت پیار کرتے ہیں ان کا اس سیٹ کو چھوڑنے کا فیصلہ در اصل ان کے اس حلقہ کی عوام پر اعتماد کو ظاہر کرتا ہے جبکہ این اے55 کی نشست چھوڑے جانے کی صورت میں تحریک انصاف کی شکست کا خدشہ تھا،ایک ایسے کمزور امیدوار کو لانے کے نتیجے میں جسکی کی جڑیں عوام میں نہ ہو ں،تمام تر توجیہات کے باوجود بدرجہ اتم موجود تھا ۔این اے56 کے سیاسی و معروضی حالات اس بات کا تقاضاکرتے ہیں کہ مخالف سیاسی قوتوں کو شکست ایک ہی صورت میں دی جا سکتی ہے جب میجر طاہر صادق کاذاتی ووٹ بنک اور تحریک انصاف کا پارٹی ووٹ بینک ایک پیج پر ہو اور یہ صورت حال ایک طریقے سے ممکن ہے کہ جب میجر طاہر یا ان کی فیملی میں سے کوئی فرد تحریک انصاف کے ٹکٹ پر الیکشن میں حصہ لے اس سے نہ تو میجر گروپ کے ووٹ بینک کاتقسیم کے شکار ہونے کا خدشہ ہوتا ہے اور پارٹی ووٹ بنک کو ساتھ ملا کر ایک یقینی جیت کاتاثرابھر کر سامنے آتا ہے یہی ایک وجہ تھی کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئر مین اور نو منتخب وزیر اعظم عمران خان نے زمینی و معروضی سیاسی حقائق کو تسلیم کرتے ہوئے طاہر صادق کو انتخابات میں بھی حلقہ این اے 56,55 پی پی 3 پر پارٹی ٹکٹ دیا اور ایک بڑے مارجن سے تینوں سیٹوں پر ان کی پارٹی نے کامیابی سمیٹی جس سے قیادت کا ان پر اعتماد مزید مضبوط ہوا اب بھی خیال کیا جا رہا ہے کہ تحریک انصاف اسی سیاسی حکمت عملی کے ساتھ ضمنی الیکشن میں اترنے جا رہی ہے واقفان حال کا کہنا ہے کہ ضمنی انتخابات کا بگل بجنے سے کہیں پہلے مخالفین کا تحریک انصاف کے ممکنہ امیدوار کے بارے میں واویلا بھی اسی وجہ سے ہے کہ میجر ووٹ بنک پلس تحریک انصاف ووٹ کا فارمولا ہی ان کی شکست کے مترادف ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook

Get the Facebook Likebox Slider Pro for WordPress