قلعہ روہتاس میں یوم آشور کا جلوس۔۔

جہلم(شیخ علی رضا نمائندہ خصوصی)محرم الحرام کا مہینہ جہاں قربانی کا درس دیتا ہے وہاں اسلامی بھائی چارہ کی بھی ایک مثال ہے اسی بھائی چارہ کی تاریخی مثال ہے قلعہ روہتاس کا یوم آشور

یوم آشور کے دن ضلع جہلم کے تاریخی قلعہ روہتاس میں چار سو سالہ قدیمی عزاداری جلوس انعقاد پزیر ہوتا ہے
اس جلوس کی اہم بات یہ ہے کہ شبیہ روزہ حضرت عباس علمدار کی تیاری میں اہلسنت اور شیعہ مسلک کے افراد ایک ساتھ حصہ لیتے ہیں ۔ اور جلوس میں شرکت بھی ایک ساتھ کرتے ہیں
برصغیر میں پہلی عزاداری ہندوستان کے بادشاہ ہمایوں کےدور میں لکھنو سے شروع ہوئی جو کہ تا حال جاری ہے
قلعہ روہتاس میں چار جلوس نکالے جاتے ہیں اور جلوس کے آگے اونٹ پر سوار دف بردار نقارا بجاتے ہیں یہ تمام جلوس قلعہ کےمرکزی دروازے پر موجود مزار سید شاہ کمال چشتی پر اختتام پزیر ہوتے ہیں اور اختتامی دعا کرائی جاتی ہے ۔

قلعہ روہتاس جہاں خود ایک تاریخی حثیت رکھتا ہے وہاں یوم آشورہ کی عزاداری چار صدیاں پرانی ہے اور مسلکی بھائی چارہ کی عظیم مثال ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook

Get the Facebook Likebox Slider Pro for WordPress