فتح جنگ شہر میں بے ہنگھم ٹریفک کا ذمہ دارشہر میں تعینات ٹریفک پولیس کا عملہ ہے۔

فتح جنگ(تحصیل رپورٹر)فتح جنگ شہر میں بے ہنگھم ٹریفک کا ذمہ دارشہر میں تعینات ٹریفک پولیس کا عملہ ہے غیر قانونی اڈوں اور تجاوزات کے ساتھ ساتھ بین الصوبائی چوک میں ٹریفک پولیس کا ناکہ بھی ٹریفک کی روانی میں رکاوٹ بن گیا ہے سکول اور کالجز کی چھٹی کے دوران جب سنگین ٹریفک جام ہوتا ہے تو اس وقت بھی مرکزی چوک میں اووڑ ہیڈ برج کے نیچے ٹریفک سارجنٹ اور مال بردار ہیوی گاڑیوں کو روک کر چالان اور مک مکا میں مصروف ہوتے ہیں شدید گرمی اور حبس کے باعث ٹریفک جام میں پھنسی سکول اور مسافر گاڑیوں میں شہری اور طالب علم شدید پریشانی میں مبتلا ہوتے ہیں فتح جنگ کوہاٹ روڈ ،اٹک روڈ ،کھوڑ روڈ اور پنڈی روڈ پر مسافر گاڑیوں کے کئی غیر قانونی سٹینڈ موجود ہیں جہاں ہر وقت درجنوں گاڑیاں کھڑے ہو کر مسافر اتارنے اور بٹھانے میں مصروف ہوتے ہیں ایمبولینس کا سائرن بھی کوئی سننے کیلئے تیار نہیں ٹریفک پولیس اور مقامی انتظامیہ کی ملی بھگت سے ریڑھیوں کی بجائے اور سوزوکیوں پر موبائل دکانیں بھی کھل گئی ہیں جو سڑک کنارے کھڑے ہوکر اپنی دکانیں چلاتے ہیں ٹریفک پولیس کا عملہ ان کی باز پرس کرتا ہے نہ ہی مقامی انتظامیہ کا کوئی افسر یا اہلکار انہیں پوچھتا ہے مصروف ترین بین الصوبائی شاہرات اور مرکزی چوک میں غیر قانونی رکشہ اور ٹیکسی سٹینڈ بھی موجود ہیں جنہوں نے سڑک کے بیشتر حصہ پر قبضہ جما رکھا ہوتا ہے شہری حلقوں نے ٹریفک کے سنگین مسائل کے حل کیلئے فتح جنگ میں بائی پاس روڈ فوری طور پر بنانے کا مطالبہ کیا ہے بائی پاس روڈ بننے تک شہر سے غیر قانونی اڈوں ،تجاوزات اور غیر قانونی ناکے ختم کرنے کا مطالبہ بھی کیا ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook

Get the Facebook Likebox Slider Pro for WordPress