حکومتی ایم پی اے سید یاور بخاری کا آبائی گاؤں کامرہ فلاحی مرکز سے محروم 

ٍٍاٹک (بیورو رپورٹ ) حکومتی ایم پی اے سید یاور بخاری کا آبائی گاؤں کامرہ فلاحی مرکز سے محروم کامرہ کا فلاحی مرکز واپس گاؤں میں لا کر قائم کیا جائے 33 ہزار کے لگ بھگ آبادی فیملی پلاننگ کی سہولت سے محروم ، نامعلوم وجوہات کی بنا پر فلاحی مرکز کامرہ گاؤں سے پڑی گیٹ( پی اے سی) کے اند رشفٹ کر دیا گیا تھا ان خیالات کا اظہار اہلیان علاقہ نے میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا اہلیان علاقہ کا کہنا تھا کہ کئی سال پہلے کامرہ گاؤں میں فلاحی مرکز قائم ہوا تھا جس سے کامرہ گاؤں کی تینتیس ہزار کے لگ بگ آبادی کے علاوہ نزدیکی دیہات پنڈ سلمان مکھن، زیارت اور مدروٹہ وغیرہ کے لوگ بھی مستفید ہو تے تھے مگر محکمہ بہبود آبادی کے حکام نے اس فلاحی مرکز کو پی اے سی کے اندر شفٹ کر دیا جہاں ان دیہات کی آبادی کو سیکورٹی مسائل اور حفاظتی اقدامات کی وجہ سے اندر جانے کی اجازت نہیں ملتی اہلیان علاقہ نے مطالبہ کیا ہے کہ چونکہ پی اے سی میں ان کا پنا ہسپتال اوت ایم آئی روم اور دیگر عملہ موجود ہے لہذا اس فلاحی مرکز کو پڑی گیٹ سے کامرہ گاؤں منتقل کیا جائے تاکہ گاؤں کے غریب لوگ اس سہولت سے فائدہ اٹھا سکیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Facebook

Get the Facebook Likebox Slider Pro for WordPress